جہلم میں گراں فروشوں نے حکومت پنجاب کے نرخ ناموں کی دھجیاں اڑا دیں

جہلم: ضلعی انتظامیہ کے تمام تر دعوے اور انتظامات دھرے کے دھرے رہ گئے گراں فروشوں نے حکومت پنجاب کے نرخ ناموں کی دھجیاں اڑا دیں، لوٹ مار کا بازار گرم ، پرائس کنٹرول مجسٹریٹس خواب غفلت میں مبتلا ہے۔

شہر سمیت ضلع بھر میں اشیاء خوردونوش پھلوں اور سبزیوں کی قیمتیں آسمانوں کو چھونے لگیں، ذخیرہ اندوزوں نے مصنوعی قلت پیدا کر کے خوردونوش اشیاء مہنگے داموں فروخت کر کے ظلم کی انتہا کر دی شہر کے دکانداروں و سبزی فروش مافیا کی طرف سے پھلوں سبزیوں سمیت اشیاء خوردونوش کی قیمتوں میں بھی عدم استحکام ہے 100 روپے والی اشیا پر 100 روپے منافع کمایا جا رہاہے جس کے تمام تر ذمہ دار پرائس کنٹرول مجسٹریٹس اور ضلعی افسران ہیں۔

اسسٹنٹ کمشنر و پرائس کنٹرول مجسٹریٹس عملی طور پر غیر فعال دکھائی دیتے ہیں، فوٹو سیشن کے لئے پرائس کنٹرول مجسٹریٹس مارکیٹوں میں چھوٹے دکانداروں کو جرمانے کرتے دکھائی دیتے ہیں جسکی وجہ سے بڑے بڑے مگر مچھ لوٹ مار کابازار گرم کئے ہوئے ہیں جبکہ پرائس کنٹرول مجسٹریٹس بڑے کارروباری افراد کے نرخ نامے چیک کرنے کی بجائے ریڑھی بانوں کو جرمانے کرکے افسران کو مطمئن کر دیتے ہیں۔

شہریوں نے وزیراعلیٰ پنجاب، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ گراں فروشی کے مرتکب دکانداروں کے خلاف فوجداری مقدمات کا اندراج کروایا جائے تاکہ ضلع بھر میں نافذ جنگل کے قانون کا خاتمہ ممکن ہو سکے ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button