غیر معیاری اجزاء سے تیار مٹھائیاں اور نمک پاروں کے استعمال سے شہری موذی امراض میں مبتلا ہونے لگے

جہلم: شہر میں ناقص و غیر معیاری اجزاء سے تیار کی جانے والی مٹھائیاں، نمک پاروں کے استعمال سے شہری موذی امراض میں مبتلا ہونے لگے، پنجاب فوڈ اتھارٹی کی خاموشی سوالیہ نشان بن گئی۔

تفصیلات کے مطابق شہر اور گردونواح کے بازاروں میں قائم سویٹ شاپس میں تیار ہونے والی مٹھائیاں ، نمک پاروں کے استعمال سے شہری ، بچے ، بزرگ مختلف امراض میں مبتلا ہونا شروع ہو چکے ہیں۔

اس حوالے سے صارفین کا کہنا ہے کہ سویٹس شاپس کے مالکان انتہائی ناقص وغیر معیاری اجراء کا استعمال کرکے زیادہ سے زیادہ منافع کمانے کے چکروں میں شہریوں میں بیماریاں فروخت کررہے ہیں ، ناقص و غیرمعیاری مٹھائیوں ، نمک پاروں کے استعمال کی وجہ سے بچے، بڑے موذی امراض میں مبتلا ہورہے ہیں۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران نے شہریوں کے مسائل سے مکمل لا تعلقی اختیار کرلی ہے ۔ جس کی وجہ سے سویٹ شاپس کے مالکان دیدہ دلیری کے ساتھ ناقص و غیر معیاری مٹھائیاں، نمک پارے فروخت کر رہے ہیں۔

شہریوں نے ڈی جی پنجاب فوڈ اتھارٹی سے مطالبہ کیاہے کہ فوڈ اتھارٹی کے ذمہ داران کو سویٹ شاپس کے کارخانوں کو چیک کرنے کا پابند بنایا جائے ناقص و غیر معیاری اجزاء سے تیار کرنے والی سویٹس شاپس کو سیل کیا جائے تاکہ شہری مہلک امراض سے محفوظ رہ سکیں ۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button