کم عمر بچوں میں موبائل فون کے استعمال کے برے اثرات مرتب ہونے لگے

جہلم: کم عمر بچوں میں موبائل فون کے استعمال کے برے اثرات مرتب ہونے لگے، موبائل فونز کے زیادہ دیر استعمال سے بچوں میں آنکھوں کی مختلف بیماریاں تیزی سے پھیلنے لگی ہیں۔

دیہی علاقوں کی نسبت شہری علاقوں کے رہائشی بچوں میں موبائل فونز کا استعمال کثرت سے دیکھنے میں آرہاہے، 5 سے 8 سال کی عمر کے بچوں میں موبائل فونز کے استعمال کا رجحان تیزی سے بڑھ رہا ہے جس سے بچوں میں آنکھوں کی بیماریاں، آنکھوں میں خشکی پیدا ہونا اور آنکھوں کا جلنا اور نظر کی کمزوری کے ساتھ ساتھ چھوٹی عمر میں چشمے لگانے کا رجحان بڑھتا جا رہا ہے۔

ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے ماہرین امراض چشم نے صحافیوں کو بتایا کہ والدین بچوں کے ساتھ زیادتی نہ کریں۔ بچوں کو موبائل فونز سمیت ٹیبلیٹ، کمپیوٹر کے بے جا استعمال سے دور رکھیں، زیادہ دیر موبائل، ٹیبلٹ اور چھوٹی عمر میں گھنٹوں لیپ ٹاپ یا وڈیو گیمز پر نظریں جمانے سے بچوں کی ذہنی اور جسمانی نشوونما پر برے اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔

شعبہ امراض چشم کے ڈاکٹرزکا کہنا ہے کہ موبائل فونز سے جو شعاعیں نکلتی ہیں جس کے باعث آنکھوں میں سے پانی بہنا، دماغ کی کمزوری، ہڈیوں کی کمزوری جیسی موذی بیماریاں بھی لاحق ہو سکتی ہیں۔ کم عمر بچوں میں زیادہ دیر موبائل فونز کے استعمال سے مائی اوپیا بھی ہوسکتا ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button